0

پی ایس ایل کے فنانشل ماڈل کا تنازعہ، پی سی بی نے فرنچائزز کے اعتراضات پر تاحال جواب جمع نہ کرایا مگر کیوں؟ اندرونی کہانی سامنے آ گئی

لاہور (آئی پی پی) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے تاحال فرنچائزز کے اعتراضات پر جواب جمع نہیں کرایا اور ان کا غصہ ٹھنڈا کرنے کی کوششیں بھی جاری ہیں تاکہ معاملات مل بیٹھ کر حل کئے جا سکیں۔ 

تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) فرنچائزز نے فنانشل ماڈل میں تبدیلی کیلئے پی سی بی کیخلاف عدالت سے رجوع کیا ہوا ہے اور ان کا موقف ہے کہ اربوں روپے کی سرمایہ کاری کے باوجود مسلسل گھاٹا ہی ہوا لیکن بورڈ شکایات کا ازالہ کرنے کو تیار نہیں ہے۔ 

لاہور ہائیکورٹ نے بدھ کو کرکٹ بورڈ سے جواب طلب کیا جس نے پیر کو فرنچائزز کے تحفظات کا جواب جمع کرانے کا کہا تھا مگر ایسا نہ ہو سکا، اب منگل کو اس کی توقع ہے، قانون کے تحت سماعت سے پہلے جواب جمع کرانا ضروری ہوتا ہے۔

گزشتہ روز دونوں جانب کے وکلاءاپنی حکمت عملی تیار کرتے رہے جبکہ فرنچائزز کا غصہ ٹھنڈا کرنے کی کوشش بھی جاری ہے مگر تاحال کامیابی حاصل نہیں ہوئی، گزشتہ دنوں پی ایس ایل کے پراجیکٹ ایگزیکٹیو شعیب نوید نے تمام اونرز سے الگ الگ رابطہ کر کے میٹنگ کیلئے 7 سے 10 اکتوبر کے درمیان کسی دن دستیابی کا پوچھا ہے۔

ذرائع کے مطابق بعض بااثر حلقے عدالت سے باہر ہی معاملات طے کرانے کیلئے سرگرم ہیں البتہ فرنچائززکاکہنا ہے کہ اگر بورڈ پہلے ہی شکایات کا ازالہ کر دیتا تو معاملات اس نہج تک نہیں پہنچتے، اب عدالت کو ہی فیصلہ کرنے دیں، تمام مالکان نے مل کرہی بورڈ کے خلاف کیس کیا ہے،اس حوالے سے کوئی بھی قدم مشترکہ طور پر ہی اٹھایا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں