بابر اعظم کی کپتانی پر دس سال بعد بات کریں: اظہر الدین

بھارتی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان محمد اظہر الدین
بھارتی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان محمد اظہر الدین نے پاکستانی صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کا اپنا اسٹائل ہے، فطری طور پر وہ اوپننگ بلے باز نہیں ہیں، مار دھاڑ ان کا کھیل نہیں ہے جب کہ بطور کپتان انہیں مزید وقت ملنا چاہیے۔

متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں پاکستانی صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سابق بھارتی کپتان محمد اظہر الدین کا کہنا تھا کہ بابر اعظم بہت اچھے کھلاڑی ہیں، وہ کافی اچھا کھیلتے ہیں، ان کا گیم الگ ہے، مار ڈھاڑ کرنا ان کا انداز نہیں ہے، تو اگر وہ مار دھاڑ کی کوشش کریں گے تو وہ اپنی فطری صلاحیت کے خلاف جائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ کھلاڑی کو اپنی فطری صلاحیت پر ہی زیادہ محنت کرنی چاہیے، جب آپ کوئی نئی چیز ٹرائی کرتے ہیں تو اس میں ماہر نہیں ہوتے تو وہاں ناکام ہونے کے امکانات ہوتے ہیں لیکن بابر اعظم کا جیسا بھی کھیلنے کا انداز ہے میرے خیال میں وہ اچھا ہی کھیل رہے ہیں۔

بھارتی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان نے کہا کہ جب کوئی کھلاڑی بڑے فورم پر کھیلتا ہے جہاں بال سوئنگ ہوتا ہے تو عمومی طور پر یہ دنیا میں یہ دیکھا جارہا ہے کہ جہاں بال سوئنگ ہوتا ہے تو وہاں کھلاڑی غلطی کرتے ہیں۔

‎اظہر الدین نے کہا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے دو اہم کھلاڑی بابر اعظم اور محمد رضوان ہیں، گزشتہ کچھ میچز دیکھیں تو بابر اعظم ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوئے یا جلد آؤٹ ہوئے، اس طرح کی صورتحال میں آپ کو سوچنا پڑے گا کہ اگر اوپر کے نمبر پر کھیلنے میں رن نہیں بن رہے تو نیچلے نمبروں مثال کے طور پر نمبر دو، تین یا چار پر کھیلنا کافی فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے۔

انہوں نے بابر اعظم کی کپتانی سے متعلق سوال پر کہا کہ انہیں کپتان بنے زیادہ وقت نہیں ہوا، انہیں کپتان بنے ابھی ایک ڈیڑھ سال ہوا ہے، انہیں مزید کچھ موقع دینا چاہیے، جب تک آپ انہیں مزید موقع نہیں دیں گے تو اتنی جلدی کسی پلیئر یا کپتان کو جج کرنا آسان کام نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چند سال قبل پاکستانی کھلاڑی یونس خان نے اپنی بیٹنگ کے حوالے سے مشورہ کیا تھا جس پر انہیں کہا کہ وکٹ پر تھوڑ ا ٹہر کر کھیلں جس کے بعد ان کی کارکردگی میں بہتری آئی تو انہوں نے اسے تسلیم کیا جسے میں سراہتا ہوں۔

پاکستان باؤلرز کی صلاحیتوں سے متعلق اظہار خیال کرتے ہوئے اظہر الدین نے کہا کہ پاکستان کے پاس بہت اچھے باؤلرز ہیں لیکن انہیں چاہیے وہ اپنی فٹنس پر توجہ دیں، اس پر کام کریں، کیونکہ ان فٹ ہونے کے بعد اچھے باؤلرز کے لیے بھی واپس آکر کھیلنا کافی مشکل ہوتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا باؤلنگ اٹیک اچھا ہے، نوجوان باؤلرز ہیں لیکن فٹنس پر دھیان دینے کی ضرورت ہے۔

انگلش کرکٹ ٹیم کی حالیہ کارکردگی پر تبصرہ کرتے ہوئے اظہر الدین نے کہا کہ انگلینڈ کی ٹیم زبردست کرکٹ کھیل رہی ہے، ان کے نوجوان کھلاڑیوں نے اچھی اور جارحانہ کرکٹ کھیلی۔

Related Posts

پاکستان کرکٹ کو دوام بخشنے کے لئے گراس روٹ پر کام کرنا ہو گا: شاہد آفریدی

سابق چیف سلیکٹر شاہد خان آفریدی نے کہا ہے کہ قومی ٹیم کے لیے غیر ملکی کوچ کی جانب سے آن لائن کوچنگ کا تصور سمجھ سے…

ہارون رشید قومی کرکٹ ٹیم کے نئے چیف سلیکٹر مقرر

پاکستان کرکٹ بورڈ ( پی سی بی ) کی منیجمنٹ کمیٹی کے چیئرمین نجم سیٹھی نے اعلان کیا ہے کہ ہارون رشید قومی ٹیم کے نئے چیف…

فاسٹ بولر وہاب ریاض پنجاب کی نگران کابینہ میں شامل

پنجاب کے نامزد 11 نگران وزرا میں سے 8 نے حلف اٹھا لیا، گورنر پنجاب بلیغ الرحمان نے نگران وزرا سے حلف لیا۔ حلف اٹھانے والوں میں…

آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ٹیم آف دی ایئر کا اعلان

انٹر نیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے مینز ٹی ٹوئنٹی ٹیم آف دی ایئر کا اعلان کر دیا جس میں دو پاکستانی کھلاڑی بھی شامل ہیں۔…

نیشنل اکیڈمی میں پریکٹس کی اجازت ملنے پرعمر اکمل کا نجم سیٹھی کے نام پیغام

قومی کرکٹر عمر اکمل کو نیشنل کرکٹ اکیڈمی کی سہولیات استعمال کرنے کی اجازت مل گئی جس پر انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ کا شکریہ بھی ادا…

بابراعظم مسلسل دوسری مرتبہ ون ڈے کرکٹر آف دی ایئر قرار

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم مسلسل دوسرے سال بھی انٹرنیشنل کرکٹ کونسل مینز ون ڈے کرکٹر آف دی ایئر کا ایوارڈ حاصل کرنے میں کامیاب…